خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام کا اجراء ۔ انصاف صحت کارڈ ہر فرد کیلیئے

3 142

خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام کا اجراء ۔ انصاف صحت کارڈ ہر فرد کیلیئے

خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام کا اجراء ۔ وزیر اعظم عمران خان نے خیبر پختونخوا کی پوری آبادی کے لئے صحت سہولت پروگرام شروع کیا ہے۔ یہ اعلان جمعرات کو کیا گیا۔

اس صحت سہولیت پروگرام کے تحت خیبر پختونخواہ حکومت کے پی کے کی پوری آبادی کو ہر سال 10 لاکھ روپے فی ہیلتھ انشورنس فراہم کرنے کی اہل ہوگی۔ خیبر پختونخواہ کی 60 لاکھ خاندان آبادی 2021 تک مرحلہ وار اپنے CNIC کے ذریعے اس موقع سے فائدہ اٹھاسکیں گے۔

وزارت اطلاعات نے بھی اپنے ٹوئیٹر پیغام کے ذریعے تصدیق کی ہے۔

افتتاحی تقریب کے دوران وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے اس اقدام کی بھر پور تعریف کی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کے پی کا صحبت سہولیت پروگرام دوسرے صوبوں پر بھی دباؤ ڈالے گا۔ انہوں نے یہ بھی مزید کہا کہ وہ پنجاب حکومت کو دبائیں گے۔ جس صوبے میں پی ٹی آئی اقتدار میں ہے اور بلوچستان حکومت کو بھی اپنے صوبے میں اسی طرح کے پروگرام شروع کرنے کا مشورہ دیا جائے گا۔

وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ تینوں صوبوں کے عوام مفت صحت کی دیکھ بھال سے فائدہ اٹھانا شروع کر دیں۔ سندھ کے عوام بھی اسی طرح کے پروگراموں کے لئے صوبائی حکومت سے مطالبہ کریں گے۔ خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام

خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگراممزید پڑھیں

صحت سہولت پروگرام کی اہم خصوصیات

  • صحت سہولت پروگرام کے تحت ہر خاندان کو سالانہ 10 لاکھ روپے کی صحت کی کوریج ملے گی۔
  • تمام نامزد سرکاری اور نجی اسپتال صوبے کے رہائشیوں کو مفت علاج فراہم کریں گے۔
  • اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن ، جسے مسابقتی بولی لگانے کے عمل کے بعد منتخب کیا گیا ہے۔ کو دس لاکھ روپے دیئے جائیں گے۔ ہر خاندان میں 2،849۔
  • صحبت سہولت پروگرام کے پینل میں 200 سے زیادہ اسپتال شامل ہیں اور مزید بھی شامل کیے جائیں گے۔
  • نجی شعبے کو مزید اسپتالوں کی تعمیر کے لئے حوصلہ افزائی کی جائے گی جس سے صحت کے عملے کے لئے مزید ملازمتیں پیدا ہوں گی۔

خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام

 

خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرامصحت سہولت پروگرام

صحت سہولت پروگرام مندرجہ ذیل طبی سہولیات پیش کرتا ہے۔

  • عام دوا
  • جنرل سرجری
  • آرتھوپیڈکس
  • Gynae اور نسوانی طبیعیات
  • بچوں کے امراض
  • حادثہ اور ایمرجنسی (تمام طبی / جراحی کی ایمرجنسی نگہداشت جو سیکنڈری کیئر ہسپتالوں میں فراہم نہیں کی جاسکتی ہے)
  • قلبی دشواری
  • ذیابیطس کی پیچیدگیاں
  • ہر قسم کے کینسر کا انتظام
  • جینیٹو پیشاب کی بیماریوں کا انتظام جس میں ڈائلیسس اور ٹرانسپلانٹ شامل ہیں۔
  • نیورو سرجیکل امراض کا انتظام۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پی ایم عمران خان نے کہا کہ بجٹ کی رکاوٹوں کے باوجود پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت نے اس پروگرام کو نافذ کیا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس پروگرام سے عوام کو صحت کی بہتر سہولیات کی فراہمی کے لئے سرکاری شعبے کے اسپتالوں کی حوصلہ افزائی اور حوصلہ افزائی ہوگی کیونکہ نجی شعبے کے اسپتال مفت علاج معالجہ فراہم کریں گے۔

وزیر اعظم نے یہ بھی کہا:

نجی اسپتالوں کے لئے مراعات کے طور پر امپورٹڈ میڈیکل آلات پر ڈیوٹی چارجز ختم کردیئے جائیں گے۔
محکمہ اوقاف اور انخلاء ٹرسٹ جو بھی اسپتال بنانے کے لئے چاہتا ہے اسے کم شرحوں پر اراضی پیش کرے گا۔
تمام شہریوں کو صحت کی دیکھ بھال کرنے کے لئے دور دراز علاقوں میں اسپتال بھی بنائے جائیں گے۔
ہیلتھ انشورنس سی این آئی سی رکھنے والے سب کے لئے دستیاب ہوگا۔ خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام

کے پی صحت سہولت پروگرام

مالاکنڈ ڈویژن کے سوات ، بونیر ، دیر اپر ، دیر لوئر ، شانگلہ ، مالاکنڈ ، چترال لوئر ، چترال اپر اور باجوڑ اضلاع کے تمام باشندوں کو ان کی مالی حیثیت سے قطع نظر ، اکتوبر سے مفت صحت کی دیکھ بھال حاصل کرنا شروع ہوجائے گی۔
نومبر میں ہزارہ ڈویژن۔ مردان اور دسمبر میں پشاور۔
جنوری میں کوہاٹ ، بنوں اور ڈیرہ اسماعیل خان

 

اس پروگرام کا پہلا مرحلہ 2015 میں شروع کیا گیا تھا اور اس میں 3٪ آبادی شامل تھی۔
دوسرا مرحلہ 2016 میں شروع ہوا تھا اور اس میں آبادی کا 51٪ حصہ شامل تھا۔
تیسرا مرحلہ 2017 میں شروع ہوا تھا اور اس میں مجموعی طور پر 64 فیصد آبادی شامل تھی۔
اب تک 250 ارب افراد کے مفت علاج پر 10 ارب روپے سے زیادہ خرچ ہوچکے ہیں۔ خیبرپختونخواہ (kpk) صحت سہولت پروگرام

 

مزید پڑھئیے

آیا صوفیہ کے بعد مسجد اقصٰی اگلی منزل ہے۔ آج کا ارتغرل رجب طیب اردوان

صحت منسٹری

sehat card punjab online registration,

 

  1. […] خیبرپختونخواہ (Kpk) صحت سہولت پروگرام کا اجراء ۔ انصاف صح… […]

  2. […] خیبرپختونخواہ (Kpk) صحت سہولت پروگرام کا اجراء ۔ انصاف صح… […]

Leave A Reply

Your email address will not be published.