نیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ اربوں روپے قومی خزانے میں جمع …

2 74

نیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ اربوں روپے قومی خزانے میں جمع

نیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ اسلام آباد : نیب نے 2 سال میں 363 ارب، 91 کروڑ 80 لاکھ روپے قومی خزانے میں جمع کرا دیئے۔

نیب کی 2020 میں کارکردگینیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی قیادت میں گزشتہ کئی برسوں سے زیر التواء مقدمات کو بھی نمٹایا گیا۔ ذرائع کے مطابق نیب کو آرڈیننس 1999 کے تحت قائم کیا گیا۔ جس کو آگاہی، تدارک اور انفورسمنٹ کی پالیسی پر عمل کر تے ہوئے ملک سے بد عنوانی کے خاتمے کا اختیار دیا گیا۔

2 سال کے دوران جاوید اقبال کی قیادت میں اصلاحات کے ذریعے نیب کو فعال ادارہ بنایا گیا۔ نیب کی کارکردگی اور استعداد کار میں بہتری لائی گئی اور زیر التواء کیسز کو نمٹایا گیا۔ نیب کے مقدمات کو تیزی سے نمٹانے کے لئے شکایات کی جانچ پڑتال، انکوائری اور انویسٹی گیشن کے لئے 10 ماہ کا عرصہ مقرر کیا گیا ہے۔

 

مزئد پڑھیئے : آیا صوفیہ کے بعد مسجد اقصٰی

نیب کی 2020 میں کارکردگی

 

ملزمان کی گرفتاری کی صورت میں شکایات کو مکمل کرنے اور بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کے لئے 90 روز کا وقت مقرر کیا گیا۔ شکایات کے اندراج پر مخصوص شناخت نمبر جاری کیا جا رہا ہے۔

نیب کو گزشتہ 2 سال کے دوران 75 ہزار 268 شکایات موصول ہوئیں جن میں سے 66 ہزار 838 کو نمٹا دیا گیا، اس عرصہ میں 2417 شکایات پر کارروائی کی منظوری جبکہ 2036 شکایات پر کارروائی مکمل کی گئی، گزشتہ 2 سال کے دوران نیب نے 1240 انکوائریز کی منظوری دی جبکہ 1220 مکمل کی گئیں.

نیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ نیب کا ادارہ پچھلے کچھ سالوں سے بہت زیادہ تنقید کا سامنا کر رہا ہے. اسے جہاں کچھ لوگ بہت ہی مفید ادارہ سمجھتے ہیں. وہی کچھ لوگ اسے انتقامی کارروائیوں کا ادارہ بھی کہتے ہیں. نیب کو انیس سو ننانوے میں ٹرانسپیرنسی اور کرپشن کے خاتمے کے لیے بنایا گیا تھا. پی ٹی آئی حکومت میں نیب نے بہت سے کیسز سے پردہ اٹھایا اور بہت سے کیسز کو مکمل بھی کیا ہے.

نیب کے سیاسی کیسز

نیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ ان میں سیاسی کیسز سرفہرست تھے ان سیاسی کیسز میں حکومت کے حمایتی اس کی تعریف کرتے نظر آتے ہیں وہی اپوزیشن کے حمایتی اسے انتہائی تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں. ذاتی پسند اور ناپسند سے بالا ہو کر اگر نیب کی کاروائی کا جائزہ لیا جائے. تو نیا ملک کی ترقی کے حوالے سے انتہائی اہم کردار ہے. اگر نیب کو انتہائی آزادی کے ساتھ کام کرنے کی اجازت دے دی جائے۔ تو ممکن ہے کہ ملک سے کرپشن اور رشوت خوری کا خاتمہ ہوسکتا ہے۔

نیب کی ریکوری کی حالیہ رپورٹ کے بعد اس کی اس کی پرفارمنس واضح طور پر سامنے آ چکی ہے۔ نیب کے حالیہ سربراہ جاوید اقبال کی سربراہی میں اس ادارے نے انتہائی اہم اور انتہائی حساس کیسز پر کام کیا ہے۔ اسی وجہ سے نائب پچھلے کچھ سالوں سے تمام اخبارات کی سرخیوں میں شامل رہا۔

 

 

۔

  1. […] نیب کی 2020 میں کارکردگی ۔ اربوں روپے قومی خزانے میں جمع […]

Leave A Reply

Your email address will not be published.